English اُردو        
  رابطہ اغراض و مقاصد تعارف سرورق

31-08-2012

پریس ریلیز

مقتدرہ قومی کے زیر اہتمام خادم حسین سومرو کی مرتبہ کتاب ’’ صوفی شاہ عنایت ‘‘ کی تقریب رونمائی کی گئی ۔ صدرنشین ڈاکٹر انوار احمد نے مہمانوں کو خوش آمدید کیا اور تقریب کے افتتاحی کلمات ادا کیے ۔ تقریب کے مہمان خصوصی چےئرمین فیڈرل پبلک سروس کمیشن جسٹس (ر) رانا بھگوان داس تھے۔ انھوں نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انھوں نے چار دہائیوں تک انصاف کی فراہمی کے لیے کام کیا ہے۔ میرا دھرم نا ہندو ہے ، نا مسلمان میرا مذہب انسانیت کی خدمت ہے۔ یہ زمین جو پاکستان کے حصے میں آئی وہ امن اور صلح کا پیغام دیتی ہے۔ سندھ میں بہت صوفی شعراء گزرے ہیں جیسے شاہ عبداللطیف ، لال شہباز قلندر ، صوفی شاہ عنایت اور اسی طرح پنجاب میں بابا فرید الدین گنج شکر ، شاہ شمس ، بہاء الدین زکریا، مادھو لال حسین اور اسی طرح سندھ کی دھرتی ہمیشہ پیار ومحبت امن اور صلح کی دھرتی رہی ہے۔ اس دھرتی نے باہر سے آنے والوں کو ہمیشہ اپنے اندر سمویا اور اپنابنا لیا ۔ سچی عبادت یہ ہے کہ بے لوث خدمت کرنا ہے اور بعد میں پھل کی تمنا نا کرنا ہے۔ ڈاکٹر نجیب جمال صدر شعبہ اُردو انٹرنیشنل اسلامک یونیورسٹی کے اس استفسار پر کہ کیا ہمارا فیڈرل پبلک سروس نے ہمسایہ ملک بھارت کی پیروی میں قومی زبان کو بھی مقابلے کے امتحان میں ذریعہ اظہار بنانے کے اقدامات ہورہے ہیں تو رانا بھگوان داس نے بتایا کہ اس سلسلے میں فیصلہ فیڈرل پبلک سروس کمیشن کو نہیں پاکستان کی جمہوری سیاسی قیادت کو کرنا ہے تاہم اس سلسلے میں ہماری جانب سے حکومت کو چند سفارشات بھیجی گئی ہیں۔ جن پر فیصلہ ہونا باقی ہے۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے خادم حسین سومرو نے کہا کہ بیسویں صدی کے جو سیاسی جوڑتوڑ ہوئے اس کے نتیجے میں سندھ میں کئی تحریکوں نے جنم لیا اور صوفی شاہ عنایت کی جو تحریک تھی وہ صدیوں سے چلتی آرہی ہے۔ وادی سندھ سَنتوں ، سادھوؤں اور صوفیاء کی سرزمین تھی اور مذہب انسانیت سے اوپر نہیں ۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر انوار احمد نے کہا کہ اِس وقت آزاد عدلیہ کی بحالی کے حوالے سے کریڈٹ لینے والے بہت سے کردار موجود ہیں مگر حقیقت میں یہ رانا بھگوان داس ہیں جن کی اصول پسندی اور استقامت نے ڈکٹیٹر کے بہت سے منصوبوں کو خاک میں ملا دیا یہ ان کی دوسری بڑی خوبی ہے کہ وہ سادگی اور انکسار سے پیچھے ہٹ گئے اور ہیروبننے کی چاہ میں مبتلا نہیں ہوئے اور ناقوم کے اعصاب پر سوار ہوئے۔ تقریب سے ڈاکٹر خرم قادر، نصیر میمن ، فیاض باقر،ڈاکٹرنجیب جمال ، فضل اللہ قریشی ، عدیل خان نے بھی خطاب کیا۔تقریب کی نظامت کے فرائض ہاشم ابڑو نے سرانجام دئیے ۔ تقریب میں جڑواں شہروں سے علم وادب سے شغف رکھنے والے لوگوں کی کثیر تعدادنے شرکت کی ۔
(جاوید اختر)
مشیر ابلاغ عامہ
051-4863394 0300-5128944

 
 
جملہ حقوق بحق ادارۂ فروغِ قومی زبان محفوظ ہیں